Like Our Facebook Page

New Poets Added

Poets Directory

Latest Poetry

Your Poetry

Wo hum nahe jenhain sehna ye sabar ajata (Parveen Shakir)

Make This Poetry Your Favorite

وہ ہم نہیں جنہیں سہنا یہ جبر آ جاتا تری جدائی میں کس طرح صبر آ جاتا فصیلیں توڑ نہ دیتے جو اب کے اہل قفس تو اور طرح کا اعلان جبر آ جاتا وہ فاصلہ تھا دعا اور مستجابی میں کہ دھوپ مانگنے جاتے تو ابر آ جاتا وہ مجھ کو چھوڑ کے جس آدمی کے پاس گیا برابری کا بھی ہوتا تو صبر آ جاتا وزیر و شاہ بھی خس خانوں سے نکل آتے اگر گمان میں انگار قبر آ جاتا

Comment Box is loading comments...

More Poetry Of Parveen Shakir