Like Our Facebook Page

New Poets Added

Poets Directory

Latest Poetry

Your Poetry

Haal khulta nahii jabeenoN se (Wasi Shah)

Make This Poetry Your Favorite

حال کُھلتا نہیں جبینوں سے رنج اُٹھائے ہیں کن قرینوں سے رات آہستہ گام اُتری ہے درد کے ماہتاب زینوں سے ہم نے سوچا نہ اُس نے جانا ہے دل بھی ہوتے ہیں آبگینوں سے کون لے گا شرارِ جاں کا حساب دشتِ امروز کے دفینوں سے تو نے مژگاں اُٹھا کے دیکھا بھی شہر خالی نہ تھا مکینوں سے آشنا آشنا پیام آئے اجنبی اجنبی زمینوں سے جی کو آرام آ گیا ہے اداؔ کبھی طوفاں، کبھی سفینوں سے ************ Haal khulta nahii jabeenoN se Ranj uThaye haiN kin qareenoN se Raat aahista gaam utrii hai Dard ke maahtaab zeenoN se Humne socha na usne jana hai Dil bhi hote haiN aabgeenoN se Kaun lega sharaar-e-jaN ka hisab Dasht-e-imroz ke dafeenoN se Tu ne miZgaaN uTha ke dekha bhi Shahr khali na tha makeenoN se Aashnaa aashnaa pyaam aaye Ajnabi ajnabi zameenoN se Dil ko aaraam aagaya hai ‘Ada’ Kabhi toofaN kabhi safeenoN se

Comment Box is loading comments...

More Poetry Of Wasi Shah