تازہ ترین

News Detail

ذمہ دار کون

ذمہ دار کون . عوام ..... ڈاکٹرز مافیا .... محکمہ صحت .... ارباب اختیاروارباب اقتدار......میڈیا...... سات جولائی کی رات روبینہ نامی مریضہ مردان میڈیکل کمپلیکس کے لیبر روم لائی گئی . ڈاکٹرز و عملے نے انہیں آپریشن کے بغیر علاج تجویز کی . لیکن چار گھنٹے بعد مریضہ کے لواحقین سے کہا گیا کہ مریضہ کی صحت کو خطرہ ہے . اور اسے فوری طور پر پشاور لے جائیں . مریضہ کے رشتہ داروں نے جب احتجاج کیا تو انچارج ڈی ایم ایس موقع پر پہنچا . وارڈز ڈاکٹرز نے اسے بتایا کہ وارڈ میں جگہ موجود نہیں . ڈی ایم ایس نے وارڈ انتظامیہ کو بارہا کہا کہ مریضہ کو چار گھنٹے تک کیوں رکھا . ٹریٹمنٹ نہ کرنے سے مریضہ کی جان کو خطرہ لاحق ہو سکتا ہے . مگر وارڈ میں موجود ڈاکٹرز نے ڈی ایم ایس کی باتیں سنی ان سنی کردی . جس کے بعد مریضہ کو پرائیویٹ کلینک میں لیڈی ڈاکٹر کے پاس لے جایا گیا . اور نہایت مجبوری اور غربت کے باوجود پچاس ہزار روپے دیکر پرائیویٹ لیڈی ڈاکٹر سے علاج کروایا گیا .

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)