تازہ ترین

News Detail

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ چین کادورہ ہر لحاظ سے کامیاب رہا

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ چین کادورہ ہر لحاظ سے کامیاب رہا۔ پشاور سے راولپنڈی تک ڈبل ریلو ے ٹریک کی منظوری ہوگئی جبکہ خیبرپختونخوا حکومت اور چین کے ساتھ ہونے والے 24 بلین ڈالر کے منصوبوں کے لیے مشترکہ ایم او یوز پر دستخط کرنے کیلئے چینی وفود کی آمد کا سلسلہ شروع ہے جن میںبجلی منصوبوں، انڈسٹریل پارکس، پشاور، نوشہرہ، مردان ، چارسدہ صوابی فاسٹ ریلوے ٹریک ، گلگت دیر چکدرہ چترال سی پیک متبادل شاہراہ سمیت کئی اہم منصوبوں پر اگلے مالی سال سے کام شروع ہوجائیگا۔ وہ چین کے دورے سے واپسی کے بعد نوشہرہ میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کررہے تھے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن میاں جمشید الدین کاکاخیل، ضلع ناظم نوشہرہ لیاقت خان خٹک، ایم این اے ڈاکٹر عمران خٹک اور ایم پی اے میاں خلیق الرحمان بھی موجود تھے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ چین زمینی اور سمندری راستوں سے پوری دُنیاکے ساتھ تجارتی اور اقتصادی روابط بڑھانا چاہتا ہے اورجس کے دور رس نتائج نکلیں گے۔ان منصوبوں سے تمام ممالک کو فائدہ ہوگا خیبرپختونخوا میں پشاور سے راولپنڈی تک دو رویہ ریلوے ٹریک کا معاہدہ بھی ہو گیا ہے۔ چین میںصوبائی حکومت نے جو روڈشوکیاتھااس کے منصوبوں کے ایم اویوزپردستخط کیلئے چینی وفود کی آمد کاسلسلہ شروع ہے۔ ان معاہدوں سے خیبرپختونخوا میں ترقی کی نئی راہیں کھل جائیں گی اورخیبرپختونخوا کے بے روز گار اور ہنر مند نوجوانوںکو باہر جانے کی ضرورت نہیں ہوگی وہ اپنے صوبے اور علاقے میں رہتے ہوئے باعزت روزگار کما سکیں گے۔قبل ازیں وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں بیجنگ روڈ شو میں طے شدہ خیبر پختونخوا چائنہ انوسٹمنٹ پلان کے تحت مختلف محکموں کی طرف سے اب تک کی پیش رفت پر جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی نے چین سے خیبر پختونخوا کے گورنمنٹ ٹو گورنمنٹ اور بزنس ٹو بزنس معاہدوں اور منصوبوں کو ہم پورے اعتماد کے ساتھ خیبر پختونخوا چائنہ انوسٹمنٹ پلان کا نام دے سکتے ہیں جس پر انکی روح کے مطابق عمل ہو گا۔انہوں نے حکام کو سختی سے ہدایت کی کہ چینی کمپنیوں کے ساتھ کئے گئے ہر عہد اور ڈیڈلائن کی تکمیل یقینی بنا ئی جا ئے۔انہوںنے مزید ہدایت کی کہ محکمے تعمیراتی معاملات میں فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن سے منصوبوں پر معاہدوں کی تاریخ اگلے ہفتے کنفرم کریں۔انہوںنے مزید ہدایت کی کہ ڈبلیو ایس ایس پی اسکیموں کی آئوٹ سورسنگ فوری طور پر مشتہر کریں۔انہوںنے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ اس سلسلے میں دو سال سے ٹال مٹول ہورہی ہے۔ مزید تاخیر کی گنجائش نہیںاور نہ ہی اس سلسلے میں مزید چشم پوشی برداشت کی جائے گی ۔پرویزخٹک نے کہا کہ صرف کارپوریٹ ادارے ہی صحیح معنوں میں عوام کو ڈیلیور کر سکتے ہیں اور یہ پوری دُنیا میں ہور ہا ہے ۔ سرکاری ادارے پبلک خدمات میں ناکامی سے دو چار رہے ہیں جو تجربات سے ثابت ہو چکا ہے ۔

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)