تازہ ترین

News Detail

پشتو ادب کا ایک اور درخشندہ ستارہ ہم سے جدا

پشتو ادب کا ایک اور درخشندہ ستارہ ہم سے جدا
مالاکنڈ درگئ سے تعلق رکھنے والا ادیب، شاعر، ڈاکٹر،اور سماجی ورکر ڈاکٹر خالق زیار وفات پا گئے،ڈاکٹر خالق زیار پیشے کے لحاظ سے ڈاکٹر تھا،اور انہون نے پشتو ادب کے بہت کام کیا جو کہ ہمیشہ یاد رکھا جائیگا،
ڈاکٹر خالق زیار نے کئی کتابیں بھی لکھے تھے جسمیں انکی شاعری کی کتاب تلوسے، خلیل جبران کے ترجمہ شدہ کتاب مات سانگونہ، مالاکنڈ کے تاریخ کے حوالے سے دا خاورہ او دا خلق کتاب بھی ترجمہ کیا تھا،
ڈاکٹر خالق زیار کے پشتو ادب کے لئے کام ہمیشہ یاد رکھا جائیگا اور ان کے کام کی وجہ سے انکا نام ہمیشہ زندہ رہیگا،
یاد ریے کہ ڈاکٹر خالق زیار صدارتی ایوارڈ یافتہ رحمت شاہ سائیل کا جگری دوست بھی تھا،اور دونوں بچپن سے ہی ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑے تھے،اللہ تعالیٰ ڈاکٹر خالق زیار کو جنت الفردوس عطا فرمائے امین

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)