تازہ ترین

News Detail

coco 2017 review

coco 2017 IMDB 8.9 آپ یا تو وہ ہو جو آپ بننا چاہتے ہو۔۔یا پھر آپ وہ ہو جو لوگ آپ کو بنانا چاہتے تھے۔۔۔ اس مووی کی شروعات بھی ایسے ہی تذبذب کا شکار بچے سے ہوتی ہے۔۔ جسے سنگیت کا جنون ہوتا ہے۔۔ وہ گانا چاہتا ہے اپنا ہنر دنیا کو دکھانا چاہتا ہے مگر اس کے آڑے پشتوں سے چلی آ رہی ایک قدغن ہے جس کے بنا پر خاندان میں سنگیت اور گانے بجانے کا نام تک لینا گویا جرم کے برابر ہے۔۔۔ اس سختی کی وجہ دہایوں پہلے اس بچے کے پر پر دادا کی بے رخی تھی جو سنگیت کے جنون مین اور اپنا نام ہنر دنیا کے سامنے پیش کرنے کی چاہ میں گھر سے جاتے ہیں تو کبھی لوٹ کر نہی آتے۔۔ اس کی پر پر دادی اپنی بچی کوکو کو اپنے دم پر پالتی ہے بڑا کرتی ہے۔۔مگر اسے سنگیت سے اتنی نفرت ہو چکی ہوتی ہے کہ وہ اپنے خاندان میں کسی کو گنگنانے تک کی اجازت نہی دیتی کیوں کہ اسی وجہ سے اس کاشوہر اسے زمانے کے حوالے کر کے کبھی لوٹ کر نہ آیا۔۔۔برسوں بعد یہی سختی خاندان میں سراعیت کرتی اب اس بچے کے سامنے دیوار بنی کھڑی تھی۔۔جو اپنے پر پر دادا کی طرح نام کمانا چاہتا تھا اپنا ہنر دنیا کے سامنے دکھانا چاہتا تھا۔۔اور اس کی پہلی سیڑھی شہر میں ہونے والا وہ مقابلہ تھا جس میں حصہ لے کر وہ آگے کی سیڑھیان چڑھ سکتا۔۔ اس کے ان عزائم کی بھنک جب اس کے گھر والوں کو پڑتی ہے تو اس کا واحد گٹار توڑ دیا جاتا ہے تاکہ نہ رہے گٹار نا بجے گانا۔۔ مگر لگن کو کون روک سکتا ہے وہ گھر سے بھاگ کر مقابلے کی جگہ پہنچتا ہے مگر وہاں اصول کے مطابق گٹار ہونا لازمی ہے ورنہ وہ اہل نہی ہو سکتا حصہ لینے کا۔۔ اس کشکمکش میں وہ اپنے دادا کی قبر پر جاتا ہے جہان اسے ان کا گٹار نظر آتا جو انکی وصیت کے مطابق مدفن کے اوپر ٹانگا گیا۔۔۔ وہ نہ چاہتے ہوئے بھی اسے ایک دن کیلئے چرانے کا فیصلہ کرتا ہے اور چرا لیتا ہے۔۔۔ اور یہیں سے کہانی ایک دلچسپ موڑ لیتی ہے۔۔۔ آتما کی آخری یاد چرانے کی اسے قدرتی سزا ملتی ہے اور وہ آتمائوں کے جہان مین پہنچا دیا جاتا ہے۔۔۔ایک بالکل الگ جہاں اب ارواح ہیں۔۔ وہیں اسکی ملاقات اپنے خاندان کے ان لوگوں سے ہوتی یے جو اس دنیا میں نہی۔۔ اس میں اس کی پر پر دادی بھی ہوتی ہیں۔۔ دنیا میں واپسی کا ایک ہی راستہ ہوتا ہے کہ اسی کے خاندان کی کوئی روح اسے بلیسنگ دے ورنہ صبح ہوتے ہوتے وہ کبھی دنیا میں نہی لوٹ سکے گا۔۔۔ اس کی پر پر دادی اے بلیسنگ دیتی ہے جس میں یہ دعا بھی شامل ہوتی ہے کہ وہ دنیا میں جا کر کبھی سنگیت کی طرف نہی جائے گا۔ وہ یہ بلیسنگ قبول کرنے سے انکار کر دیتا ہے اور اس ارواح کے جہان میں اپنے پر پر دادا کی تلاش میں نکل پڑتا ہے کیوں کہ اسے ہقین ہوتا ہے اس کے گھر والون کی طرح اس کے پچھلے گزرے بھی بلیسنگ مین اسے سنگیت سے دور رکھنا چاہیں گے مگر اس کے پر پر دادا نہی ۔۔وہ ان سے بلیسنگ لے سکتا تھا جس میں سنگیت کو چھوڑنے کی قدغن بھی نہی ہوگی اور وہ دنیا میں واپس بھی جا سکے گا۔

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)