تازہ ترین

News Detail

Bicycle Thieves review

فلم: ۔۔۔"بائیسکل تھیف" اس فلمی دنیا میں کئی ایسی فلمیں ہیں جنہوں نے سینما کو نت نئے تجربات اور اسلوب اور انداز عطا کئے جس کی بنیاد پر ترقی کرتے ہوئے آج سینما انڈسٹری ہمارے سامنے ہے۔۔۔ سینما کے عظیم میڈیم کے پیچھے بھی ایسے کئی جینئس اذہان تھے جیسے کسی اہم سائنسی ایجاد یا پیشرفت کے پیچھے کئی جینئس دماغ ہوتے ہیں۔ اٹلی کا "ویٹوریو دے سیزا" بھی ایسا ہی جینئس فلم میکر تھا جسے فلم میکنگ کے بڑے اساتذہ میں سے ایک مانا جاتا ہے۔ یقینا آج آپ کو کمرشل سینما کی رنگینیوں اور کمپوٹر گرافک کی طلسماتی دنیاوں میں بنائی گئی فلموں کے مقابلے میں پرانی بلیک اینڈ وائیٹ اور رئیل ازم پر مبنی ایسی فلمیں شایدپسند نہ آئیں جن میں پندرہ پندرہ منٹ کے ایسے خاموش سین ہوں جو آپ کو بور کردیں۔۔ لیکن یہی وہ آرٹ تھا جسے فلمانے کے بعد آج بھی ان فلموں کو عظیم ترین مانا جاتا ہے ۔۔۔آرٹ فلموں کے شائقین اس بات کو اچھی طرح سمجھتے ہیں۔ لیکن موجودہ فلم جس کا تذکرہ کر رہا ہوں "بائیسکل تھیف" میں چاہتا ہوں کہ آپ سب اسے دیکھیں۔۔ تاکہ آپ کو پتہ چلے رئیل ازم میں فلم میکنگ کیسی ہوتی ہے۔۔۔ یہ ہماری اصلی زندگی کے حقیقی مسائل کو یوں بیان کرتی ہے کہ سینما ہال میں بیٹھا ہر شخص یہ سوچتا ہے کہ یہ اس کی کہانی ہے۔۔۔یا پھر اس کہانی سے اس کا کوئی رشتہ ضرور ہے۔۔۔ آل ٹائم گریٹسٹ موویز میں شمار کی جانے والی "ویٹوریو دے سیزا" کی یه اٹالین فلم فن هدایتکاری اور فن اداکاری کا ایسا شاهکار هے جس نے فلم میکنگ کی دنیا میں بهت سے هدایتکاروں کو متاثر کیا اور ایک طویل عرصے تک اپنا اثر کام رکھا. کہا جاتا ہے کہ اس فلم کے بعد ایک طویل عرصے تک دنیا بھر کی خاص طور پر اٹالین فلمیں اس کے اثر سے باہر نہ نکل سکیں۔۔۔ یه فلم پچاس سالوں سے دنیا کی بهترین فلم اور فلم انسٹیٹیوٹ کی دس عظیم فلموں میں شمار هوتی هے. اس فلم کا ذکر آپ کو اشفاق احمد کے زاویه پروگرام کی کسی نشست سے بھی سنائی دے گا. فلم کی کهانی ایک ایسے غریب آدمی کےگرد گھومتی هے جسے طویل محنت کے بعد پوسٹر لگانے کا کام ملتا هے...کام کے دوران اس کا سائیکل چوری هوجاتا هے...بنا سائیکل یہ کام اس سے واپس لیا جا سکتا تھا۔۔سو وہ پورے شہر میں اس سائیکل چور کو تلاش کرتا رہتا ہے۔۔۔۔۔ایک وہی نہیں سینکڑوں لوگ بے روزگار بیٹھے ہیں۔۔ ایسے میں وہ اپنے ہاتھ آئے اس اکلوتے کام کو جانے نہیں دینا چاہتا۔۔۔تاکہ گھر میں بیوی بچوں کا پیٹ بھر سکے۔۔۔۔ زندگی کی تلخ حقیقت بلآخر اسے اس مقام پر لے آتی ہے جهاں اسے خود ایک سائکل چور بننا پڑتا هے..۔۔یہ اس سائیکل چور کی کہانی ہے محض 93 منٹ کی اس فلم کا ایک ایک سین اور سین کا ایک ایک فریم۔۔۔ اپنی جگہ ایک ایسی آرٹ پینٹنگ کی طرح ہے جس پر آپ گھنٹوں بات کرسکتے ہیں۔۔۔لیکن اس فلم کا کلائمکس یعنی آخری سین۔۔۔۔ ایک ایسا منظر ہے جسے بیان نہیں کیا جا سکتا دیکھا جا سکتا ہے اور محسوس کیا جا سکتا ہے۔۔۔ اور جس نے یہ منظر دیکھا۔۔وہ میری طرح شاید اسے کبھی بھلا نہیں پائے گا

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)