تازہ ترین

News Detail

In Time movie review

اِن ٹائم In Time اِن ٹائم 2011 میں ریلیز ہوئی ایک امریکی فلم ہے! اس فلم کی پسندیدگی کی وجہ اس میں پیش کیا گیا منفرد خیال ہے!!! اس فلم میں ایسا زمانہ دکھانا گیا ہے جس میں ہر شخص کے بازو پر ایک گھڑی چلتی رہتی ہے جو کہ اس کی باقی ماندہ زندگی کو ظاہر کرتی ہے! ہر شخص کو اپنی ضروریات پوری کرنے کے لئے اپنے بازو پر موجود گھڑی سے وقت ٹرانسفر کرنا ہوتا ہے! تنخواہ وصول کرنی ہے تو بازو پو موجود گھڑی میں وقت ٹرانسفر کروا لیں! یعنی وقت کو دولت طاہر کیا گیا ہے!!! اس فلم میں دو طبقات کو دکھایا گیا ہے۔ ایک طبقہ غریب لوگوں پر مشتمل ہے جن کے بازر پر موجود گھڑی میں چوبیس گھنٹے سے زیادہ وقت نہیں ہوتا۔ انہیں روزانہ کی بنیاد پر کام کر کے اپنی ضروریات پوری کرنا پڑتی ہیں۔ اور دوسرا طبقہ امرا کا جن کے بازو پر سینکڑوں سالوں کا وقت موجود ہوتا ہے! دونوں طبقات الگ الگ شہروں میں آباد ہیں۔ غریب لوگ امیروں کے شہر میں جانے کا تصور بھی نہیں کر سکتے!!! اس فلم میں ایک اور مختلف خیال پیش کیا گیا ہے کے ایک مخصوص وقت کے بعد لوگوں کی عمر بڑھنا رک جاتی ہے۔ اس عمر تک پہنچنے پر وہ جیسے نظر آتے ہیں، باقی تمام عمر وہ ویسے ہی نظر آتے رہیں گے! فلم کی کہانی ایک غریب لڑکے کے گرد گھومتی ہے جسکی زندگی میں ایک ڈرامائی موڑ اس وقت آتا ہے جب وہ ایک شرابی کو مرنے سے بچاتا ہے! شرابی اسے انعام کے طور پر اپنا سارا وقت جو کے 100 سال سے زائد ہوتا ہے، اس کے سونے کے دوران ٹرانسفر کر دیتا ہے اور خود ایک پل سے کود کر خود کشی کر لیتا ہے! اُس لڑکے پر شرابی کے قتل کا الزام لگ جاتا ہے کے اس نے شرابی سے سارا وقت چھین کر اسے قتل کر دیا ہے! جس دن لڑکے کو ڈھیر سارا وقت ملتا ہے، اسی دن اسکی ماں کی سالگرہ ہوتی ہے۔ اس دن کام سے واپسی پر اسکی ماں کے وقت سے بطور قرض لی گئی رقم کی کٹوتی ہو جاتی ہے اور اس کے بازو پر موجود گھڑی میں اتنا وقت نہیں بچتا کے وہ بس کا کرایہ ادا کر سکے۔ اسکی ماں بس ڈرائیور سے کہتی ہے کے اسے کچھ وقت ادھار دے دے۔ اسکا بیٹا بس سٹاپ پر اسے اسکا وقت واپس کر دے گا لیکن ڈرائیور انکار کر دیتا ہے اور اسے مشورہ دیتا ہے کے آج بس سے جانے کی بجائے بھاگ کر گھر پہنچے! اسکی ماں کے پاس اس مشورہ پر عمل کرنے کے علاوہ اور کوئی صورت نہیں ہوتی! وہاں سے دوڑتی ہوئی اپنے بیٹے کے پاس پہنچنے کی کوشش کرتی ہے لیکن بیٹے کے پاس پہنچنے سے ایک سیکند پہلے اس کی گھڑی میں وقت ختم ہو جاتا ہے اور وہ اپنے بیٹے کی بانہوں میں جان دے دیتی ہے!! یہیں سے اصل کہانی کا آغاز ہوتا ہے! لڑکا اس نظام کے خلاف بغاوت کر دیتا ہے اور امیروں کے علاقے میں جا پہنچتا ہے اور وہاں ایک امیرزادی سے مل کر وہاں لوٹ مار مچاتا ہے اور غریبوں میں مفت وقت تقسیم کرنے لگ جاتا ہے

Comment Box is loading comments...

Make up Tip of the day

Using Small plates are Helping lose belly fat

Cooking Tip of the day

Aaloo Chaps (Potato Chaps)